Kashif Hafeez Siddiqui

اردو اور شناخت کا مسلہ

In pakistan, Pakistan's Ideology, Urdu Columns on April 9, 2011 at 1:43 am

Advertisements
  1. السلام و علیکم ،
    بہت خوشی ہوئی کہ آپ نے اس موضوع پر قلم اٹھایا. مقتدر طبقہ نے حتی المقدور کوشش کی ہے کہ کسی طرح نو آبادیاتی اور استعماری نظام ختم نا ہو پائے اور انگریز کی پروردہ کالی اشرفیہ لوگوں پر حکومت کرتی رہے اس کام کو یقینی بنانے کے لئے دوہرا نظام تعلیم نافذ کیا گیا اور اسکے پورے پورے فوائد سمیٹے گئے اور آج تک سمیٹ رہی ہے. اسکا بڑا نقصان قوم کو یہ ہوا کہ ہم کنزیومر سوسایٹی بن کر رہ گئے. اب یہ بات تو طے ہو چکی ہے کہ ہمارے یہاں کوئی بڑی علمی اور سائنسی شخصیت پیدا نہیں ہوگی ، تحقیق کا تو کہنے ہی کیا ، کچھ تحقیق پرویز مشرف نے بند کی اور باقی تحقیق چپل چور زرداری بند کر دے گا.اب ہمارے یہاں بابو یا کلرک ٹائپ گریجویٹ پیدا ہونگے جن میں اپنی ناک سے آگے دیکھنے کی صلاحیت نہیں ہوگی .الله سبحانه تعالیٰ کے اس تحفے کے ساتھہ بحیثیت قوم ہم نے وہ کچھ کیا ہے کہ سوچتے ہوے بھی ہول اٹھتے ہیں …

  2. […] اردو اور شناخت کا مسلہ […]

  3. “URDU HAI JIS KA NAAM HAMI JANTE HAIN DAAGH
    SARAY JAHAN MAIN DHOOM HAMARI ZUBAAN KI HAI.”
    intehai sharam ka maqam hai un logoon k liye jinhain Urdu se shamindgi hoti hai…kaale angrez ban k un ko konse surkhaab k par lag jatay hain…

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: